کنزرویشن ایگریکلچر کاشتکاری کے ایسے نظام کو کہا جاتا ہے جس میں کھیت میں کم سے کم ہل چلایا جاتا ہے،کھیت کو ہر وقت مختلف فصلوں، باقیات یا ملچ کے ذریعے کور رکھا جاتا ہے، اسکے علاوہ فصلوں کی  ہر سال گردش  کی جاتی ہے۔اس کا مقصد وسائل کے استعمال کو بہتر بنا کر زرعی پیداوار کو بڑھانا ہے۔ کنزرویشن ایگری کلچر میں ہل چلانے کے بجائے قدرت طریقوں  کا استعمال کیا جاتا ہے جیسا کہ مٹی میں موجود مائکروآرگنزم ، جڑیں اور مٹی میں موجود دوسرے کیڑوں کی مدد سے مٹی کو مکس کیا جاتا ہے۔ زمین کی زرخیزی (غذائیت اور پانی)کوبرقرار رکھنے کے لئے زمین کو ہر وقت مختلف فصلوں سے کوور رکھا جاتا ہے، فصلوں کو ہر سال بدل کر کاشت کیا جاتا ہے اور جڑی بوٹیوں کا بروقت انسداد کیا جاتا ہے۔

اس کاشتکاری نظام کو مرحلہ وار  لاگو کیا جاتا ہے۔

پہلا مرحلہ:پہلے مرحلے میں صرف کھیت میں ہل نہیں چلایا جاتا  یا ایسے طریقوں کا استعمال کیا جا تا جن  میں ہل بہت کم چلایا جائے۔مشینری کا استعمال بھی کم سے کم کیا جاتا ہے۔ کھیت  کو خالی نہیں چھوڑا جاتا ۔ کوئی فصل نہ بھی لگی ہو تب بھی  کھیت کےکم از کم ایک تہائی حصے کو ہر وقت فصل کی باقیات سے  کور رکھا جاتا ہے۔

دوسرا مرحلہ: دوسرے مرحلے میں زمین کی زرخیزی کو بڑھانے کے لئے کیمیائی کھادوں کے بجائے قدرتی کھادوں  جیسا کہ گوبر کی گلی سڑی کھادکا استعمال کیا جاتا ہے۔ جڑی بوٹیوں اور کیڑوں  کو مکمل طور پر فصل سے ختم کیا جاتا ہے۔

تیسرا مرحلہ: تیسرے مرحلے میں کھیت میں ہر سال فصلوں کا ادل بدل کیا جاتا ہے۔

کنزرویشن ایگریکلچر کے  بہت سے فوائد ہیں جن میں سے کچھ مندرجہ ذیل ہیں:

  •  زمین کی ساخت بہتر ہوتی ہے۔  میکرو بائیو پور بنتے ہیں  جن سے  زمین سخت نہیں رہتی اور  پانی جذب کرنے کی صلاحیت بڑھ جاتی ہے۔
  • زمین کی تیاری اور جڑی بوٹیوں کے خاتمے پر  ہونے والے اخرا   ت میں کمی آتی ہے۔
  • مٹی کا کٹاؤ کم ہوتا ہے اور پیداوار میں اضافہ ہوتا ہے۔
  • مشینری  کے  کم استعمال کی وجہ سے  نامیاتی مادہ  زمین میں  بڑھ جاتا ہے اور کاربن ڈائی آکسائڈ کا اخراج کم ہوتا ہے۔
  • کیمیائی کھادوں کے استعمال میں کمی آتی ہے۔

ان سب فوائد کے باوجودکاشتکار حضرات کو کنزرویشن ایگریکلچر کو اپنانے میں  بہت سی رکاوٹوں کا سامنا کرنا پڑ تا ہےجیسا کہ موجودہ کاشتکاری کے نظام کو  کنزرویشن ایگریکلچر  میں بدلنے کے لئے پانچ سے سات سال کا عرصہ درکار ہوتا ہے ۔ اس زرعی نظام کے لئے مناسب بیج اور خاص مشینری  کی ضرورت پڑتی ہے جو ہر کاشتکار کے پاس میسر نہیں ہوتی ۔ اسکے علاوہ    کسان بھائیوں کے پاس اس زرعی نظام سے متعلق  مکمل معلومات کا ہونا  بھی ضروری ہے۔تبھی بہتر طور پر فائدہ حاصل کیا جا سکتا ہے۔اس نظام میں  پیداوار میں فوری اضافہ نہیں ہوتا بلکہ وقت کے ساتھ ساتھ پیداوار بہتر ہوتی ہے۔ مجموعی طور پر یہ ایک  اچھا زرعی نظام ہے ۔