فرٹیگیشن کھاد کے استعمال کا ایک ایسا طریقہ ہے جس میں ڈرپ سسٹم کے ذریعہ کھاد کو آبپاشی کے پانی میں ملا کر پودوں کوڈالاجاتا ہے۔ عام طور پرفرٹیگیشن میں کھاد کو ڈرپ سسٹم میں شامل کرنے کے لئےانجیکٹرز اور پریشر کنٹرول والو استعمال کیے جاتے ہیں۔ فرٹیگیشن سسٹم مختلف طرح کے ہوتے ہیں۔ بڑے پیمانے پر کھاد اور آبپاشی کے لئے استعمال ہونے والے فرٹیگیشن سسٹم بڑے ہوتے ہیں جبکہ چھوٹے فارمز اور گرین ہاوس کے لئے استعمال ہونے والے فرٹیگیشن سسٹم چھوٹے ہوتے ہیں۔ اسکے علاوہ ہاتھ سے چلانے والے اور خودکار(آٹومیٹک) دونوں طرح کے فرٹیگیشن سسٹم استعمال ہو رہے ہیں۔

 روایتی کھاگ ڈالنے کے طریقوں کی نسبت فرٹیگیشن تکنیک زیادہ موثر ثابت ہوتی ہے اورکھاد میں موجود غذائی اجزاء فصل تک جلدی اور زیادہ پہنچتے ہیں۔ جس سے کھاد کی کارکردگی اسی سے نوے فیصد تک بڑھ جاتی ہے۔ فرٹیگیشن کے ذریعے کھاد ڈالنے سے نائٹروجن کے استعمال کی کارکردگی پچاس فیصد سے بڑھ کر پچانوے فیصد تک ہو جاتی ہے۔ فاسفورس کے استعمال کی کارکردگی بیس فیصد سے بڑھ کر پینتالیس فیصد تک چلی جاتی ہے جبکہ پوٹاشیم کے استعمال کی کارکردگی پچاس فیصد سے بڑھ کر اسی فیصد ہو جاتی ہے۔

فرٹیگیشن کے طریقے سے ڈالی جانے والی کھادیں

فرٹیگیشن میں مائع اور پانی میں حل پذیر کھادوں کا استعمال کیا جاتا ہے۔ یوریا، امونیم نائٹریٹ، امونیم سلفیٹ، مونو امونیم فاسفیٹ، پوٹاشیم کلورائڈ، ڈائی امونیم فاسفیٹ، پوٹاشیم کلورائڈ، پوٹاشیم نائٹریٹ، پوٹاشیم سلفیٹ، مونو پوٹاشیم فاسفیٹ اور فاسفورک ایسڈ کو فرٹیگیشن کے طریقے سے استعمال کیا جا سکتا ہے۔

فرٹیگیشن کے فوائد

  • کھاد اور پانی جڑ کے قریب فرٹیگیشن کے ذریعے فراہم کیا جاتا ہے جس کے نتیجے میں فصلیں غذائی اجزاءزیادہ جذب کرتی ہیں۔

  • فرٹیگیشن کے ذریعے تمام فصلوں کو پانی اور کھاد یکساں طور پر فراہم کی جاتی ہے اس سے پچیس سے پچاس فیصد زیادہ پیداوار حاصل ہوتی ہے۔

  • فرٹیگیشن کے ذریعے کھاد استعمال کرنے سے کھاد کے استعمال کی کارکردگی اسے سے نوے فیصد ہوتی ہے۔ اور تقریباً پچیس فیصد غذائی اجزاء کی بچت ہوتی ہے۔

  • کھاد کم استعمال ہونے کی وجہ سے اخراجات میں بھی کمی اتی ہے۔

  • کیمیائی کھادوں کے استعمال میں کمی کی وجہ سے قدرتی آلودگی میں بھی کمی آتی ہے۔

  • پودوں کی جڑوں کی نشو نما میں اضافہ ہوتا ہے۔

  • اس طرح پانی اور کھاد کی بچت کے ساتھ ساتھ وقت، محنت اور توانائی کا استعمال بھی کافی حد تک کم ہو جاتا ہے۔

  • فرٹیگیشن کے ذریعے بارشوں اور سیلاب سے ہونے والے کھادوں کے نقصان میں بھی کمی آتی ہے۔