لینڈ سکیپنگ ایسے قدرتی یا انسانی ترتیب شدہ ماحول کو کہتے ہیں جو ایک دلکش منظر پیدا کرے۔ لینڈ سکیپنگ ایک آرٹ یا فن ہے جس میں قدرتی اشیاء کوضرورت کے مطابق کرکے ایک دلکش نظارہ یا ماحول تخلیق کیا جاسکتا ہے۔ ان اشیاء میں سب سے زیادہ موثر مختلف اقسام کے پھلدار اور پھولدارپودوں ہیں۔ لینڈ سکیپنگ کی دو اقسام ہیں۔ ایک قسم کو ہارڈ لینڈ سکیپونگ اور دوسری کو سوفٹ لینڈ سکیپنگ کہتے ہیں۔ ہارڈ لینڈ سکیپونگ میں آبشاریں، جھیلیں اور بیٹھنے کی جگہیں وغیرہ شامل ہیں جبکہ سوفٹ لینڈ سکیپنگ پودے، بیلیں اور درخت وغیرہ شامل ہیں۔

لینڈ سکیپ ڈیزائن کے بنیادی اصول

لینڈ سکیپ ڈیزائن کرنے کے چند بنیادی اصول ہیں جن کو مد نظر رکھ کر ہی ایک پرسکون اور آرام دہ ماحول پیدا کیا جاسکتا ہے۔ لینڈ سکیپنگ کروانا ایک مہنگا عمل ہے۔ لیکن اگر بنیادی اصولوں کو مدنظر رکھا جائے تو لینڈ سکیپنگ خود بھی کی جاسکتی ہے۔

لینڈ سکیپنگ کا بنیادی اصول توازن ہے۔ توازن کی کفیت کو دیکھا اور محسوس کیا جاتا ہے۔ ڈیزائن میں توازن کو محسوس کرنے کیلئے کسی درمیانی جگہ پر کھڑے ہو کر دونوں اطراف نگاہ ڈالیں۔ توازن خودبخود محسوس ہوگا۔ اگرایک ہی جیسی خصوصیات جیسے رنگ، قد وغیرہ والے پودے لگائے جائیں تو لینڈ سکیپ ڈیزائن میں توازن رہتا ہے۔

لینڈ سکیپ ڈیزائن میں کوئی ایک ایسی چیز ضرور ہونی چاہیئے جو مرکز نگاہ بنے۔ یہ چیز کوئی مخصوص پودا بھی ہوسکتا ہے ۔ کوئی مجسمہ ہوسکتا ہے یا کسی خاص قسم کی روشنی کا بندوبست ہوسکتا ہے۔ لیکن اس بات کا خیال لازمی رکھیں ایک منظر میں ایک سے زیادہ جازب نظر چیزیں ڈیزائن کو پیچیدہ کر دیتی ہیں۔

اچھا لینڈ سکیپ ڈیزائن سادہ ہوتا ہے کیونکہ سادگی ماحول کو پرسکون بناتی ہے۔ ماحول کو سادہ رکھنے کا بہترین طریقہ یہ ہے کہ پودوں اور رنگوں کو دھرایا جائے اور تعمیراتی ڈیزائن پیچیدہ نہ ہو۔

لینڈ سکیپ ڈیزائن میں چیزوں کا تسلسل اور تناسب بھی بہت اہم ہیں۔ تسلسل کیلئے چیزوں کو ایک ترتیب سے دھرایا جاتا ہے۔ جبکہ تناسب کا تعلق چیزوں کی آپس میں مطابقت سے ہے۔ جن چیزوں کو دھرایا جاسکتا ہے ان میں بتیاں اور راستے وغیرہ شامل ہیں۔ تناسب کیلئے جو چیز سب سے زیادہ اہم ہے وہ آنکھ کی بلندی یعنی وہ بلندی جس سے لینڈ سکیپ ڈیزائن دیکھا جائے گا۔ بہترین تناسب کے لیے چیزوں عمومی قد کے مطابق اکٹھا کریں۔