fbpx

wrapper

  0092-337-7252474   |     

 

اتوار, 13 أكتوير 2019

مٹر کی کاشت | اُردو آڈیو کیساتھ

مٹر سردیوں کی ایک اہم پھلی دار سبزی ہے۔ اس میں نائٹروجن پیدا کرنے کی صلاحیت  ہے۔ جو زمین کی ذرخیزی بڑھاتی ہے اور  مٹرکے بعد لگنے والی فصلوں کی پیداوار میں اضافے کا سبب بنتی ہے۔ اس مضمون میں مٹر کی کاشت کے اہم موضوعات وقت کاشت، زمین کی تیاری، بیج کی مقدار، طریقہ کاشت، آبپاشی اور کھادوں کے استعمال کے متعلق بتایا گیا ہے۔   

 وقت کاشت

 مٹر کی فصل معتدل آب و ہوا میں لگنے والی فصل ہے۔ مٹر کے بیج  کے اچھے اُگاؤ کیلئے اٹھارہ سے پچیس ڈگری سینٹی گریڈ درجہ حرارت موزوں ہوتا ہے۔ مٹر کی فصل کا  وقت کاشت (1) 

  • پنجاب کے میدانی علاقوں میں پندرہ ستمبر سے پندرہ اکتوبر اور پہاڑی علاقوں میں مارچ سے اپریل  ہے۔
  •  سندھ میں  پندرہ اکتوبر سے پندرہ نومبر ہے۔
  • خیبرپختون خواہ میں پندرہ ستمبر سے پندرہ اکتوبر ہے۔ 
  • بلوچستان کے میدانی علاقوں میں مارچ اور پہاڑی علاقوں میں  پندرہ ستمبر سے پندرہ اکتوبر ہے۔

 زمین کی تیاری 

 مٹر کیلئے اچھے نکاس والی بُھربُھری زرخیز زمین موزوں ہوتی ہے۔ کلر زدہ زمین میں مٹر کی فصل نہیں ہوتی۔ بیج کی بوائی سے دو سے تین ہفتے پہلے کھیت میں گوبر کی کھاد ڈال کر مٹی پلٹنے والا ہل چلائیں۔ اس سے کھاد زمین میں اچھی طرح مل جائے گی۔ اب کھیت کو پانی لگائیں۔ وتر آنے پر  زمین کی تیاری کیلئے کھیت میں دو سے تین دفعہ ہل اور سہاگہ چلائیں۔  تیار کھیت کا ہموار ہونا بہت ضروری ہے کیونکہ ناہموار کھیت میں غیرمتوازن آبپاشی پیداوار کو متاثر کرتی ہے(2)۔

 بیج کی مقدار

 مٹر کی اگیتی اقسام کیلئے فی ایکڑ پینتیس سے چالیس کلو بیج استعمال ہوتا ہے۔ جبکہ پچھیتی اقسام کیلئے فی ایکڑ بیس سے بائیس کلو بیج استعمال ہوتا ہے۔ بیج کو کاشت سے پہلے پھپھوندی کُش زہر ضرور لگائیں۔      

 طریقہ کاشت 

مٹرکی فصل عام طور پر پٹڑیوں پر بذریعہ کیرا کاشت کی جاتی ہے۔

  • اگیتی اقسام کیلئے پٹڑیوں کی چوڑائی اڑھائی فٹ رکھی جاتی ہے۔ بیج کی گہرائی ایک سے ڈیڑھ انچ جبکہ بیج سے بیج کا درمیانی فاصلہ دو انچ رکھا جاتا ہے(3)۔pea-raised-bed-sowing
  • پچھیتی اقسام کیلئے پٹڑیوں کی چوڑائی ایک سے ڈیڑھ میٹر رکھی جاتی ہے۔  جبکہ بیج سے بیج کا درمیانی فاصلہ تین انچ رکھا جاتا ہے۔
  • بیج والی فصل تر وتر ہموار زمین میں بذریعہ ڈرل کاشت کی جاتی ہے۔ قطاروں کا درمیانی فاصلہ ایک فٹ اور بیج سے بیج کا درمیانی فاصلہ چار انچ رکھا جاتا ہے۔

 آبپاشی 

 مٹرکی فصل کو پہلا پانی بوائی کے فوراً بعد لگایا جاتا ہے۔ اسکے بعد آبپاشی موسم کے مطابق ہفتہ وار یا پندرہ دن بعد کی جاتی ہے۔ اگر موسم گرم ہے تو ہفتہ وار آبپاشی ضرور کریں۔  

 کھادوں کا استعمال 

 مٹر کی فصل کو فی ایکڑ ایک بوری یوریا، ڈیڑھ بوری سپر فاسفیٹ اور ایک بوری پوٹاشیم فاسفیٹ ڈالی جاتی ہے۔  بوائی کے وقت ایک تہائی بوری  یوریا اور سپر فاسفیٹ اور پوٹاشیم فاسفیٹ کی تمام مقدار یعنی ڈیڑھ بوری سپر فاسفیٹ اور ایک بوری پوٹاشیم فاسفیٹ  ڈالی جاتی ہیں۔ ایک تہائی یوریا بیج کی بوائی کے ایک ماہ بعد ڈالی جاتی ہے۔ جبکہ بقیہ ایک تہائی یوریا پھول آنے پر ڈالی جاتی ہے۔۔ 

 

[1] Sabzian, Fuji Fertilizer Company Ltd.

[2]  Sardiaon ki sabzion ki kasht, Dr. Shahid Niaz.

[3] Munafa baksh kasht, Muhammad Ashiq, Dr Amjad, Ayub agri research institute Faisalabad.

وزٹس 1533 Last modified on اتوار, 13 أكتوير 2019 20:29
ریٹ کریں
(5 votes)

ہمارے بارے میں

 

PakAgriMarket فراہم کرتا ہے پہلی مرتبہ پاکستان میں ایک ایسا پلیٹ فارم جہاں زرعی مصنوعات کی مفت تشہیر کے علاوہ جدید کاشتکاری کی معلومات بھی فراہم کی جاتی ہیں۔  تاکہ کاشتکار کے نقصان کو کم سے کم اور منافع کو ذیادہ سے ذیادہ کیا جاسکے۔

آپ ہمارے سوشل میڈیا پلیٹ فارم کا استعمال کرتے ہوئے ہم سے رابطہ کرسکتے ہیں۔